علم حدیث , فرقہ واریت اورقران – تحقیقی مضامین Hadith -Research Articles

وَقَالَ الرَّسُولُ يَا رَبِّ إِنَّ قَوْمِي اتَّخَذُوا هَـٰذَا الْقُرْآنَ مَهْجُورًا ﴿سورة الفرقان25:30﴾

اور(روز قیامت) رسول کہے گا کہ اے میرے پروردگار! بےشک میری امت نے اس قرآن کو چھوڑ رکھا تھا ﴿سورة الفرقان25:30﴾

وَاعْتَصِمُواْ بِحَبْلِ اللّهِ جَمِيعًا وَلاَ تَفَرَّقُواْ ( آل عمران،3 :103)

’’اور تم سب مل کر اللہ کی رسی (قرآن) کو مضبوطی سے تھام لو اور تفرقہ مت ڈالو۔‘‘( آل عمران،3 :103)

إِنَّ الَّذِينَ فَرَّقُوا دِينَهُمْ وَكَانُوا شِيَعًا لَّسْتَ مِنْهُمْ فِي شَيْءٍ ۚ إِنَّمَا أَمْرُهُمْ إِلَى اللَّـهِ ثُمَّ يُنَبِّئُهُم بِمَا كَانُوا يَفْعَلُونَ ( ١٥٩ سورة الأنعام)

“جن لوگوں نے اپنے دین کو ٹکڑے ٹکڑے کر دیا اور گروہ گروہ بن گئے یقیناً ان سے تمہارا کچھ واسطہ نہیں، ان کا معاملہ تو اللہ کے سپرد ہے، وہی ان کو بتائے گا کہ انہوں نے کیا کچھ کیا ہے-

~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~
1.کتابت حدیث کی تاریخ – نخبة الفکر – ابن حجرالعسقلانی – ایک علمی جایزہ:  
اسلام ؛ قرآن اور سنت پر عمل کرنے کا نام ہے۔اسلام کی بنیاد صرف رسول اللہﷺ سے نقل وسماع ہے، قرآن کریم بھی رسول اللہﷺ ہی کے ذریعہ ملا ہے؛ انھوں نے ہی بتلایا اور آیات کی تلاوت کی ،جوبطریقۂ تواتر…[Continue reading….]

1a.سنت کی آئینی حیثیت  –  ‫فتنه انکار حدیث……

قرآن کا تعارف قرآن سے

قرآن کا بہترین تعارف قرآن خود کراتا ہے –  قرآن و سنت اسلام کی بنیاد ہے- قرآن پر عمل سے ہی صحیح اسلام ممکن ہے اور فرقہ واریت کا سد…[Continue Reading…]

‬‎2.حدیث اور اسکی اقسام

 آج میں نے تمہارے دین کو تمہارے لیے مکمل کر دیا ہے اور اپنی نعمت تم پر تمام کر دی ہے اور تمہارے لیے اسلام کو تمہارے دین...[Continue reading…].
3.سنت اور حدیث کی اہمیت اور فرق :
 اسلام ؛ قرآن اور سنت پر عمل کرنے کا نام ہے۔اسلام کی بنیاد صرف رسول اللہﷺ سے نقل وسماع ہے، قرآن کریم بھی رسول اللہﷺ ہی کے ذریعہ ملا ہے؛ انھوں نے ہی بتلایا[Continue reading…]
  کتاب اللہ کے بعد رسول اللہؐ کی سنت شریعت کا دوسرا سرچشمہ اور اصل واساس ہے، یہ قرآن کریم کی تشریح اور اس کے اصول کی توضیح اور اجمال کی تفصیل ہے، ان دونوں کے…[Continue reading…].
5.حدیث***

حدیث کی کتابت کے متعلق معلومات حدیث کی کتب سے ہی ملتی ہیں،  250-200 ھجری کے عرصہ میں علماء محدثین نے بہت محنت اور تحقیق سے حدیثوں کے بکھرے [Continue Reading…]
5A.حدیث کی کتابت قران کی طرح خلفاء راشدین نے کیوں نہ کی ؟
حادیث کے وحی ہونے یا نہ ہونے کی جہت سے بعض علماءِ نے حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی شخصیت کے دو حصے مقرر کر دیئے اور کہا کہ آپؐ کا ہر قول و فعل تو وحی نہیں البتہ آپؐ...[Continue reading…]
6.فرقہ واریت, 73 فرقوں والی حدیث:
’آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی حدیث مبارکہ ہے کہ:  بنی اسرائیل میں سے لوگ بہتر(72) فرقوں میں تقسیم ہوئے اور امت مسلمہ تہتر(73)فرقوں میں تقسیم ہو گی اِن میں سے بہتر فرقے جہنم میں جائیں گے اور ایک فرقہ جنّت…[Continue reading…]
7.مقلدین اورغیر مقلدین:
مِنَ الَّذِينَ فَرَّقُوا دِينَهُمْ وَكَانُوا شِيَعًا ۖ كُلُّ حِزْبٍ بِمَا لَدَيْهِمْ فَرِحُونَ ﴿30:32﴾   (اور نہ) اُن لوگوں میں (ہونا) جنہوں نے اپنے دین کو ٹکڑے ٹکڑے کر دیا اور (خود) فرقے فرقے ہو گئے۔ سب فرقے اسی سے خوش...[Continue reading…]

7.a.تقلید کی شرعی حثیت 

8.اسلام میں فرقہ واریت – تاویلیں، دلائل اور تجزیہ
هُوَ سَمَّاكُمُ الْمُسْلِمِينَ مِن قَبْلُ وَفِي هَـٰذَا لِيَكُونَ الرَّسُولُ شَهِيدًا عَلَيْكُمْ وَتَكُونُوا شُهَدَاءَ عَلَى النَّاسِ ۚ  ( سورة الحج22:78) اللہ نے پہلے بھی تمہارا نام “مسلم” رکھا تھا اور اِس (قرآن) میں بھی (تمہارا یہی نام ہے) تاکہ رسول تم... [Continue reading…] .
9.انسداد فرقہ واریتانسداد فرقہ واریت مختصر تاریخ اورعملی اقدامات:
وَاعْتَصِمُواْ بِحَبْلِ اللّهِ جَمِيعًا وَلاَ تَفَرَّقُواْ ’’اور تم سب مل کر اللہ کی رسی (قرآن) کو مضبوطی سے تھام لو اور تفرقہ مت ڈالو۔‘‘( آل عمران،3 :103) وَقَالَ الرَّسُولُ يَا رَبِّ إِنَّ قَوْمِي اتَّخَذُوا...[Continue reading…] 
11. بدعت، بدا :کسی شے کے عدم سے وجود میں آنے کو بدعت کہتے ہیں۔ اس طرح بدعت کرنے والے فاعل کو مبتدع یا بدعتی اور عربی میں “بَدِيع” کہا جاتا ہے۔ لغوی اصطلاح میں بدعت کسی مفعول کے عدم سے وجود میں آنے اور مبتدع اُسے وجود میں لانے والے فاعل کیلئے استعمال ہوتا ہے، جیسا کہ قرآنِ مجید میں اللہ تعالٰی نے ارشاد فرمایا: بَدِيعُ السَّمَاوَاتِ وَالْاَرْضِ (قرآن ٢:١١٧). ترجمہ: (وہی اللہ) موجد (نیا پیدا کرنے والا) ہے آسمانوں اور زمین کا  [Continue reading…]  
12..فرقہ واریت کا خاتمہ : پہلا قدم: 
آج کے دور میں مسلمان کئی فرقوں میں بٹ چکے ہیں اگرچہ ان کی اکثریت اسلام کے بنیادی عقائد اور عبادات پر متفق ہے مگر فروعی اختلافات کی شدت نے نفاق کے بیج اس طرح بو دیئےہیں کہ انتشار…
[Continue reading…]   
13: وحی متلو (قرآن ) اور غیر متلو (حدیث ) – تحقیقی جائزہ  Revelations – Quran and Hadith

14: اہلُ الرّائے (علماۓ فقہ) اور اہل الحدیث (علماۓ حدیث) کا مقام و فرق

 آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: “إِنما أقضِی بَیْنَکُمْ بِرَأْیِی فِیْمَا لَمْ یُنْزَلْ عَلَیَّ فِیہِ” (ابوداؤد، حدیث نمبر:۳۱۱۲)
جس امرکے بارے میں کوئی وحی نازل نہیں ہوتی ہے تو میں اپنی رائے سے تمہارے درمیان فیصلہ کیا کرتا ہوں۔[…….]

15. انسداد فرقہ واریت Counter Sectarian Narrative

16: قرآن کا تعارف قرآن سے….. >>>>> http://salaamone.com/quran-urdu/


What is the difference between Sunnah and Hadith? Quran is the primary source of Islam, What about Sunnah and Hadith?

Are Sunnah and Hadith Synonymous Terms?

The word Hadith is often understood to be a synonym for the word Sunnah. This is not correct. There is a great difference between the two not only regarding the extent of their authenticity, but also their content.

A narrative of the words, deeds or tacit approvals of the Prophet (sws) is called Hadith. It does not add anything to the content of Islam stated in the Qur’anand Sunnah, the two original sources of Islam. Ahadith (plural of Hadith) only explain and elucidate what is contained in these two sources and also describe the exemplary way in which the Prophet (sws) followed Islam. The scholars of Hadith Employ the term, khabr for Hadith. A khabr bears the possibility of being either right or wrong. In other words, the scholars of Hadith Believe that a khabr may be true or it may be false. For this very reason, Ahadith are also called dhanni (presumptive or indefinite).

On the other hand, the word Sunnah literally means “busy path”, “trodden path”, “beaten path”. As a term, it refers to the practices of the Prophet Abraham (sws) to which the Prophet Muhammad (sws) gave religious sanction among his followers after reviving and reforming them and after making certain additions to them.[1] The Qur’anhas directed the Prophet (sws) to obey these Abrahamic practices in the following words:

ثُمَّ أَوْحَيْنَا إِلَيْكَ أَنِ اتَّبِعْ مِلَّةَ إِبْرَاهِيمَ حَنِيفًا وَمَا كَانَ مِنَ الْمُشْرِكِينَ

Then We revealed to you to follow the ways of Abraham, who was true in faith and was not among the polytheists. (16:123)

The following three aspects further bring out the difference between Hadith and Sunnah.

  1. Firstly, while Ahadith Can be inauthentic or spurious, the Sunnahcannot be so. The Sunnahis in fact as authentic as the Qur’an. This is because of the difference in the nature of transmission. Ahadith have been transmitted by a few individuals and therefore become dependent on their character, memory and intellect – all of which can falter even if the person in question is very pious. On the other hand, the Sunnah has been transmitted by whole generations to the next. Such is the vast number of people who have adhered to certain practices that there is no possibility of any error. The memory, intellect and character of a few persons can falter but when thousands of people deliver the same thing, any faulty transmission is ruled out. Furthermore, not only have a large number of people transmitted these practices, but also there is a consensus in the ummah regarding the authenticity of these practices. In other words, people not adhering to these practices also vouch for their veracity.
  2. Secondly, Sunnahis purely related to the practical aspects of Islam such as the prayer, hajj, nikah, wuduand tayammum. Issues that pertain to belief, history, occasion of revelation and explanation of Qur’anic verses lie outside its domain. On the other hand, Ahadithare not confined to a certain sphere of Islam. Their content ranges from the practical issues of religion to intellectual ones and from historical episodes to explanations of the Qur’an and of the Sunnah Itself.
  3. Thirdly, the Sunnah Is not based on Ahadith. For instance, we have not adopted the prayer, pilgrimage, etc in all their details because a few narrators explained them to us; on the contrary, we have adopted them because every person in our surroundings is either adhering to it or vouching for its veracity. In other words, Sunnah is an entirely independent source of Islam. However some Hadith May contain a record of the Sunnah just as they may contain the record and explanation of certain verses of the Qur’an. But just as having a record of the Quran Does not make Ahadith the same as the Qur’an, having a record of the Sunnahdoes not make Ahadith Equivalent to the Sunnah.

 [Dr Shehzad Saleem www.al-mawrid.org]

https://www.quora.com/What-is-the-difference-between-Sunnah-and-Hadith-Quran-is-the-primary-source-of-Islam-What-about-Sunnah-and-Hadith

حدیث کیا ہے .. ویڈیو پلے لسٹ >>>

آخری کتاب یا کتب ؟ The Last Book or Books?